یورک ایسڈ آج کل خواتین و مرد حضرات میں پھیلنے والا ایک عام مسئلہ بن گیا ہے

یورک ایسڈ

جس کو کم و بیش ختم تو نہیں کیا جاسکتا مگر اس کو کنٹرول کسی حد تک تو ہم ضرور کرسکتے ہیں۔۔ماہرین کے مطابق: ”بہت زیادہ سرخ گوشت کا استعمال بھی یورک ایسڈ بڑھا دیتا ہے کیونکہ اس میں ایسے انزائمز شامل ہوتے ہیں جو کہ پیورائن کو توڑنے کا سبب بنتے ہیں۔” • یورک ایسڈ کیا ہے؟ ہمارے جسم میں ایک نامیاتی مرکب پیورائن پایا جاتا ہے جب یہ ٹوٹتا ہے تو یورک ایسڈ بنتا ہے۔پیورائن

ہمارا میٹابولزم ہائی کردیتا ہے یہ وجہ بھی ہوتی ہے یورک ایسڈ بڑھنے کی۔جب ہمارے گردے ٹھیک طرح سے کام نہیں کرتے تو جسم میں تیزابیت بڑھ جاتی ہے یوں یورک ایسڈ بھی بڑھ جاتا ہے۔ • نقصانات: اس کی وجہ سے گٹھنوں اور جوڑوں میں درد کی شکایت بڑھ جاتی ہے۔ہمارے گردے کمزور ہو جاتے ہیں۔اس کی وجہ سے ذہنی امراض بڑھنے لگتے ہیں۔دل کمزور ہو جاتا ہے اور ہارٹ اٹیک کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔جوڑوں میں گاؤٹ کی خطرناک بیماری ہوجاتی ہے۔ • جوڑوں کے درد/ گاؤٹ کو ختم کرنے کے لئے کونسا جوس مفید ہے۔۔۔؟ ککڑی کے جوس میں جوڑوں کے درد یعنی گاؤٹ کا بہترین علاج ہے جو یورک ایسڈ کی وجہ سے ہوتا ہے۔ اجزاء: 2 چمچ اجوائن1 ککڑی کے سلائس کٹے ہوئےآدھا لیموں1 انچ ادرک کا ٹکڑا طریقہ: 1. تمام اجزاء کو اچھی طرح دھو کر صاف کریں۔2.

ککڑی کو چھوٹے چھوٹے ٹکڑوں میں کاٹ لیں۔3. اجوائن کو پیس لیں اچھی طرح۔4. لیموں کو آدھے حصے میں کاٹ لیں۔5. ادرک کو بھی کاٹ کر الگ کرلیں۔6. بلینڈر میں تمام اجزاء ڈالیں۔7. لیجئیے تیار ہے آپ کا زبردست سا ککڑی کا جوس۔۔۔ فوائد: یورک ایسڈ کے کرسٹللائزیشن کو ختم کرنے میں ککڑی بہت فائدہ مند ہے۔یہ جوس پرانے ٹاکسن کو بھی دور کرنے میں مدد دیتا ہے۔

Leave a Comment